آج کے فیصلے کے بعد جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور ثاقب نثار میں کوئی فرق نہیں رہا سینئر صحافی حامد میر کا ردعمل

آج کے فیصلے کے بعد جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور ثاقب نثار میں کوئی فرق نہیں رہا سینئر صحافی حامد میر کا ردعمل

تشکُّر نیوز ویب ڈیسک

آج ثابت ہو گیا سپریم کورٹ میں کوئی 2 گروپس نہیں ہیں بلکہ صرف ایک گروپ ہے جو ایک پارٹی کے حق میں اور دوسری پارٹی کیخلاف استعمال ہوتا ہے، جسٹس قاضی فائز عیسٰی کے فیصلے کے بعد جس نے تحریک انصاف کو ووٹ نہیں دینا تھا اب وہ بھی پی ٹی آئی کو ووٹ دے گا، سپریم کورٹ کے فیصلے پر سینئر صحافی حامد میر کا ردعمل

سینئر صحافی حامد میر کے مطابق آج کے فیصلے کے بعد جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور ثاقب نثار میں کوئی فرق نہیں رہا۔ تفصیلات کے مطابق تحریک انصاف کو بلے کے انتخابی نشان سے محروم کر دیے جانے کے سپریم کورٹ کے فیصلے پر ردعمل دیتے ہوئے سینئر صحافی حامد نے کہا کہ یہ ویسا ہی فیصلہ ہے جیسا سینیٹ الیکشن میں ن لیگ کیخلاف ثاقب نثار نے دیا تھا۔
جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے حامد میر نے کہا کہ آج کے فیصلے کے بعد جسٹس قاضی فائز عیسٰی اور ثاقب نثار میں کوئی فرق نہیں رہا۔ سابق چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے سینیٹ الیکشن میں ن لیگ کو انتخابی نشان سے محروم کیا تھا، جبکہ اب جسٹس قاضی فائز عیسٰی نے تحریک انصاف کو اس کے انتخابی نشان سے محروم کر دیا

آج ثابت ہو گیا سپریم کورٹ میں کوئی 2 گروپس نہیں ہیں بلکہ صرف ایک گروپ ہے جو ایک پارٹی کے حق میں اور دوسری پارٹی کیخلاف استعمال ہوتا ہے، جسٹس قاضی فائز عیسٰی کے فیصلے کے بعد جس نے تحریک انصاف کو ووٹ نہیں دینا تھا اب وہ بھی پی ٹی آئی کو ووٹ دے گا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!