آزاد جموں و کشمیر پولیس نے جیل سے فرار ہونے والے مزید 3 قیدیوں کو گرفتار کر لیا

آزاد جموں و کشمیر پولیس نے گزشتہ 24 گھنٹوں کے دوران راولاکوٹ کی جیل سے فرار ہونے والے مزید 3 قیدیوں کو گرفتار کرلیا ہے، اب تک کل 6 فرار ہونے والوں کی دوبارہ گرفتاری عمل میں لائی جا چکی ہے۔

تشکر اخبار کی رپورٹ کے مطابق ڈپٹی انسپکٹر جنرل (ڈی آئی جی) شہریار سکندر نے تشکر کو بتایا کہ اسامہ مرتضیٰ اور آصف دل محمد کو ہفتہ اور اتوار کی درمیانی شب گوئن نالہ روڈ پر ریہاڑہ کراس سے اس وقت گرفتار کیا گیا جب وہ ایک وین میں راولپنڈی فرار ہونے کی کوشش کر رہے تھے۔

آزاد جموں و کشمیر پولیس نے جیل سے فرار ہونے والے مزید 3 قیدیوں کو گرفتار کر لیا

جیل ریکارڈ کے مطابق کہنہ پرات گاؤں کا رہائشی 34 سالہ آصف دل محمد قتل کے جرم میں 25 سال قید کی سزا کاٹ رہا تھا، وہ فرار ہونے والے 3 خطرناک قیدیوں میں شامل تھے جن کی گرفتاری پر 50 لاکھ روپے کا انعام رکھا گیا تھا۔

ریہاڑہ گاؤں سے تعلق رکھنے والا 26 سالہ اسامہ مرتضیٰ قتل کے ایک مقدمے میں زیر ٹرائل قیدی تھا اور فرار ہونے والے 8 افراد میں سے ایک تھا جن پر 30 لاکھ روپے کا انعام رکھا گیا تھا۔

بلیک لسٹ کمپنیوں سےکروڑوں روپے کے سرکٹ بریکرز کی خریداری، وزارت توانائی نے رپورٹ طلب کر لی

اس سے قبل ہفتے کی صبح، سب انسپکٹر محمد ادریس اور ایس ایچ او کھائیگلہ کی سربراہی میں ایک اور پولیس ٹیم نے 17 سالہ مکرم فیصل کو راولاکوٹ سے 10 کلومیٹر دور اس کے گاؤں حسین کوٹ سے گرفتار کیا تھا۔

فیصل تعزیرات پاکستان کی دفعہ 377، 341 اور 292 کے تحت غیر فطری جرم کے لیے 10 سال قید کی سزا کاٹ رہا تھا اور وہ 8 قیدیوں میں سے ایک تھا، جس پر 30 لاکھ روپے کا انعام رکھا گیا تھا۔

ڈپٹی انسپکٹر جنرل سکندر نے کہا کہ اس سے قبل تین فرار ہونے والوں کو جوڈیشل مجسٹریٹ نے پہلے ہی پولیس کی تحویل میں دے دیا گیا تھا جبکہ حال ہی میں گرفتار ہوئے تینوں قیدیوں کا ریمانڈ پیر کو حاصل کیا جائے گا۔

61 / 100

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!