(پی ٹی آئی) سے بلے کا نشان واپس لینے کے بعد امیدواروں کو مختلف انتخابی نشانات الاٹ کردیے گئے ہیں

پی ٹی آئی امیدواروں کو مختلف انتخابی نشانات الاٹ

پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) سے بلے کا نشان واپس لینے کے بعد امیدواروں کو مختلف انتخابی نشانات الاٹ کردیے گئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن آف پاکستان نے پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں کو آزاد حیثیت میں مختلف انتخابی نشانات الاٹ کر دیے ہیں۔

پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین بیرسٹر گوہر علی کو کے پی سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 10 پر آزادی حیثیت میں چینک کا انتخابی نشان الاٹ کیا گیا جبکہ این اے 23 سے علی محمد خان کو ڈولفن کا نشان دیا گیا۔

پشاور سے قومی اسمبلی کے حلقہ این اے 29 سے پی ٹی آئی کے امیدوار ارباب عامر ایوب کو پیالہ اور این اے 47 سے پی ٹی آئی کے شعیب شاہین کو فاختہ کے نشانات الاٹ کیے گئے ہیں۔

سوات کے حلقہ این اے 2 سے پی ٹی آئی کے امیدوار ڈاکٹر امجد کو چائے، این اے 3 سے سلیم الرحمان کو چمٹا اور این اے 4 سے سہیل سلطان کو بکری کا انتخابی نشان مل گیا۔
اس کے علاوہ حلقہ پی کے 5 سے پی ٹی آئی کے امیدوار اختر خان ایڈووکیٹ کو پریشر ککر، پی کے 6 سے فضل حکیم کو بھی پریشر ککر، پی کے7 سے امجد علی کوتبخے، پی کے 8 سے حمیدالرحمان، پی کے 9 سے سلطان روم کو سبز مرچ اور پی کے 10 سے محمد نعیم کو فرائی پین کا نشان الاٹ کیا گیا۔

دوسری جانب جھنگ کے حلقہ این اے 108 سے پی ٹی آئی امیدوار محبوب سلطان آزاد امیدوار کی حیثیت سے انتخابات میں حصہ لیں گے، ان کو چارپائی کا انتخابی نشان الاٹ کردیا گیا ہے۔

حلقہ این اے 109 سے پی ٹی آئی امیدوار شیخ وقاص اکرم کو بھی چارپائی کا نشان ملا ہے جبکہ این اے 110 سے پی ٹی آئی امیدوار امیر سلطان کو کرکٹ اسٹیمپ کا انتخابی نشان الاٹ کردیا گیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!