توہین الیکشن کمیشن کیس میں عمران خان اور فواد چوہدری پر فرد جرم عائد

تشکُّر نیوز رپورٹنگ،

کمیشن ممبران نے کیس کے نقول فراہم کردیں اور 16 جنوری کو گواہان کو بیان قلمبند کرانے کیلئے طلب کرلیا

اسلام آباد ( 03 جنوری 2024ء ) توہین الیکشن کمیشن کیس میں بانی چیئرمین پی ٹی آئی عمران خان اور سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری پر فرد جرم عائد کردی گئی۔ تفصیلات کے مطابق اڈیالہ جیل میں توہین الیکشن کمیشن کیس کی سماعت ہوئی جہاں الیکشن کمیشن کے ممبران نے کیس کی سماعت کی، اس دوران کمیشن نے پاکستان تحریک انصاف کے بانی چیئرمین عمران خان اور سابق وفاقی وزیر فواد چوہدری پر فرد جرم عائد کردی اور فرد جرم پڑھ کر سنائی جس پر عمران خان اور فواد چوہدری نے صحت جرم سے انکار کیا جب کہ بانی چیئرمین پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن ممبران پر جانبداری کا الزام عائد کردیا۔بتایا گیا ہے کہ ای سی پی کے کمیشن نے سابق وزیراعظم اور سابق وفاقی وزیر کو کیس کی نقول فراہم کردیں اور گواہان کو 16 جنوری کو بیان قلمبند کرانے کے لیے طلب کرلیا، جس کے بعد توہین الیکشن کمیشن کیس کی مزید سماعت 16جنوری تک ملتوی کردی گئی اور الیکشن کمیشن ممبران اڈیالہ جیل سے واپس روانہ ہوگئے۔

دوسری طرف سابق وزیر اطلاعات و نشریات فواد چوہدری نے توہین الیکشن کمیشن کیس کا جیل ٹرائل ہائی کورٹ میں چیلنج کردیا، اس حوالے سے فواد چوہدری نے فیصل چوہدری ایڈوکیٹ کے ذریعے اسلام آباد ہائی کورٹ میں درخواست دائر کی، جس میں مؤقف اپنایا کہ الیکشن کمیشن کیس میں جیل ٹرائل رکھ کر اختیارات کا غلط استعمال کیا جارہا ہے، جیل ٹرائل سے درخواست گزار کے بنیادی انسانی حقوق متاثر ہورہے ہیں۔بتایا گیا کہ فواد چوہدری کا درخواست میں عدالت سے جیل ٹرائل روکنے کی استدعا کرتے ہوئے کہنا ہے کہ درخواست گزار کے خلاف اوپن کورٹ ٹرائل ہونا چاہیئے، درخواست گزار کے خلاف اوپن ٹرائل الیکشن کمیشن میں ہی ہونا چاہیئے، عدالت درخواست گزار کو ہر سماعت پر الیکشن کمیشن کے سامنے پیش کرنے کی بھی ہدایت کرے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!