ڈی آئی خان میں چند روز کے دوران دہشت گردوں کا دوسرا حملہ

تشکور نیوز رپورٹنگ،

پولیس کی بھرپور جوابی کارروائی کے باعث دہشت گرد فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے

ڈی آئی خان :صوبہ خیبرپختونخواہ کے علاقے ڈیرہ اسماعیل خان میں چند روز کے دوران دہشت گردوں نے دوسرا حملہ کردیا، تاہم پولیس کی بھرپور جوابی کارروائی کے باعث دہشت گرد فرار ہوگئے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈی آئی خان میں کالی وانڈہ کی چونڈہ چیک پوسٹ پر دہشت گردوں کے حملے کو ناکام بنا دیا گیا، ہائی الرٹ ہونے کے باعث پولیس نے فوری جوابی کارروائی کی، جس کی وجہ سے دہشت گردوں نے فرار ہونے میں عافیت جانی، ڈی آئی خان پولیس اور سیکیورٹی فورسز کی بھاری نفری کو جائے وقوعہ پر روانہ کردیا گیا، فائرنگ کے تبادلے میں کوئی نقصان نہیں ہوا، جب کہ سیکورٹی کو مزید سخت کردیا گیا ہے۔بتاتے چلیں کہ چند روز قبل ڈیرہ اسماعیل خان میں دہشت گردوں کے خودکش حملے میں 25 سکیورٹی اہلکار شہید اور 16 زخمی ہوئے تھے، ڈی آئی خان میں درابن سکول میں رہائش پذیر سکیورٹی فورسز پر دہشت گردوں نے رات 3 بجےحملہ کیا اور خود کش گاڑی سکول کی عمارت سے ٹکرا دی، جس کے نتیجے میں عمارت گرگئی اور خود کش حملے میں 25 سکیورٹی اہلکار شہید و 16 زخمی ہو گئے۔

پولیس کی جانب سے بتایا گیا کہ درابن سکول میں فورسز کے جوان رہائش پذیر تھے، دھماکے کے بعد دہشت گرد عمارت میں گھس گئے، اسی دوران دہشت گردوں نے سکول کے ساتھ واقع تھانہ درابن پر بھی حملہ کیا جہاں پولیس اور فورسز نے دہشت گردوں کے خلاف جوابی کارروائی کی، پولیس اور سکیورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا، زخمیوں کو ڈیرہ اسماعیل خان ہسپتال منتقل کر دیا گیا، واقعے کے بعد ہسپتال میں ایمرجنسی بھی نافذ کر دی گئی۔ایسا ہی ایک واقعہ دو روز قبل صوبہ بلوچستان کے علاقہ خضدار میں پیش آیا جہاں سلطان ابراہیم خان روڈ پر دھماکہ ہوا، جس کے نتیجے میں ایس ایچ او سی ٹی ڈی جاں بحق اور 2 افراد زخمی ہوئے، پولیس حکام نے بتایا کہ دھماکہ خضدار کے ایس ایچ او سی ٹی ڈی کی گاڑی پر ہوا، جس میں پولیس افسر مراد جاموٹ شہید ہوئے، واقعے کی اطلاع ملتے ہی پولیس اور ریسکیو کی ٹیمیں وقوعہ پر پہنچ گئیں اور لاش اور زخمیوں کو ہسپتال منتقل کردیا اور علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا گیا۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!