سول اسپتال میں کروڑوں روپے کی ادویات چوری: دو ملازمین کے خلاف ایف آئی آر درج

تشکر نیوز:  سول اسپتال میں 36 کروڑ روپے کی کینسر کی ادویات کی چوری کا معاملہ کراچی کے سول اسپتال میں کروڑوں روپے مالیت کی ادویات چوری ہونے کے واقعے پر دو ملازمین کے خلاف ایف آئی آر درج کی گئی ہے۔

خانہ کعبہ کے محافظ اور کلید بردار ڈاکٹرصالح بن زین العابدین انتقال کرگئے

ایم ایس ڈاکٹر خالد بخاری کی مدعیت میں یہ مقدمہ وزیر صحت کی ہدایت پر درج کیا گیا ہے۔ ملزمان نیاز احمد خاصخیلی اور اقبال احمد چنہ کے خلاف تھانہ عیدگاہ میں دفعہ 409 اور دفعہ 34 تعذیرات پاکستان کے تحت مقدمہ قائم کیا گیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق، سول اسپتال سے کینسر کے علاج میں استعمال ہونے والی 36 کروڑ روپے کی ادویات چوری ہو گئی تھیں۔ اس سنگین واقعے کی رپورٹ وزیر صحت کو پیش کی گئی، جنہوں نے فوری طور پر ایف آئی آر درج کرنے کے احکامات جاری کیے۔ ڈاکٹر خالد بخاری نے معاملے کی مزید تحقیقات کا مطالبہ کیا ہے تاکہ دیگر ممکنہ ملوث افراد کو بھی بے نقاب کیا جا سکے۔

پولیس حکام کے مطابق، مقدمہ درج ہونے کے بعد ملزمان کی تلاش اور گرفتاریاں جلد متوقع ہیں۔ ادویات کی چوری کا یہ واقعہ نہ صرف سول اسپتال بلکہ پورے محکمہ صحت کے لیے باعث تشویش ہے، اور اس معاملے میں مزید پیش رفت کے لیے تحقیقات جاری ہیں۔

70 / 100

One thought on “سول اسپتال میں کروڑوں روپے کی ادویات چوری: دو ملازمین کے خلاف ایف آئی آر درج

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!