کرپٹو کرنسی کی تاریخی چھلانگ کے بعد ” کریش لینڈنگ”

تشکُّر نیوز رپورٹنگ،

بٹ کوائن کی 69 ہزار ڈالر کی تاریخی سطح کو چھونے کے بعد 59 ہزار ڈالر تک پسپائی

قیمتوں میں اتارچڑھاؤ سے کرپٹوٹریڈرز میں بے چینی۔ کچھ کو نقصان، کچھ سنبھلنے لگے

کرپٹو کرنسی بٹ کوائن کی تاریخی چھلانگ کے بعد کریش لینڈنگ ہوئی ۔ 69ہزار ڈالر کی تاریخی سطح کو چھونے کے فوری بعد 59ہزار ڈالر تک پسپائی ۔۔۔ قیمت میں اتار چڑھاؤ سے کرپٹو ٹریڈرز میں بے چینی ۔۔۔۔ کچھ کو بڑا نقصان ۔۔۔۔ کئی دوبارہ سنبھلنے لگے ۔۔۔کرپٹو کرنسی بٹ کوائن کو ایک بار پھر پرلگ گئے۔قیمت دو سال کی ریکارڈ سطح پرپہنچ گئی۔قیمت انہترہزارڈالرکی سطح عبورکرنےکےبعدپینسٹھ ہزارڈالرکی سطح پرآگئی۔

بٹ کوائن نے نومبر دو ہزار اکیس میں اڑسٹھ ہزار نو سو ننانوے ڈالر کا ریکارڈ بنایا۔رپورٹس کے مطابق مارکیٹ ویلیوکےلحاظ سے سب سےبڑی کریپٹو کرنسی میں اس سال پچاس فیصد کااضافہ ہوا۔زیادہ تراضافہ گزشتہ چند ہفتوں میں ہواجہاں امریکامیں رجسٹرڈبٹ کوائن فنڈزکی آمد میں اضافہ ہوا۔ماہرین نےبٹ کوائن کی قیمت دوسال کی بلندترین سطح پرپہنچنےکوٹرننگ پوائنٹ قراردیا۔بٹ کوائن کی قیمت مزیدبڑھنے کی توقع کا بھی اظہار کیا۔ماہرین کے مطابق بڑے مرکزی بینکوں کی جانب سے رواں سال شرح سود میں کمی کے بڑھتے ہوئے دعوے بھی کرپٹو کرنسیوں کے لیے ایک نعمت ثابت ہوئے ہیں، جن سے 2022 میں کرپٹو مارکیٹوں پر چھائی مایوسی کے بادل چھٹنے میں مدد ملی ہے۔ہوسکتا ہے بہت سارے لوگوں کو کرپٹو کرنسی کے بارے میں نہ معلوم ہو لیکن بِٹ کوائن کا نام سب نے ہی سُن رکھا ہوگا۔ آپ کو بتاتے ہیں کہ یہ ہے کیا ۔۔

بِٹ کوائن ایک کرپٹو کرنسی ہے جسے آپ ڈیجیٹل کرنسی بھی کہہ سکتے ہیں۔ یہ روایتی طور پر دُنیا بھر میں استعمال ہونے والی کرنسیوں ڈالر، پاونڈ یا روپے وغیرہ سے مختلف اس لیے ہے کیونکہ اسے کوئی مستند مالی ادارہ کنٹرول نہیں کرتا۔شاید یہی وجہ ہے کہ لوگ سمجھتے ہیں کہ ایسی کرنسی جو کسی ادارے کے کنٹرول میں نہیں انھیں مالی آزادی فراہم کرتی ہے، لیکن دوسری جانب اسی وجہ سے اس کرنسی کی قدر غیریقینی کا شکار رہتی ہے۔ریکارڈ تنزلی کے بعد فروری 2024 میں بٹ کوائن کی قیمت ایک بار پھر تیزی سے اوُپر جانا شروع ہوئی اور آج کل یہ تاریخی سطح تک پہنچی ہوئی ہے۔ اور جن لوگوں کے پاس یہ کرنسی موجود ہے ان کے لیے یہ ایک بہت اچھی خبر تھی۔لیکن یہ بات بھی قابلِ ذکر ہے کہ صرف کچھ عرصے پہلے بِٹ کوائن کی قدر تیزی سے گری تھی اور ایسا حالیہ دور میں متعدد مرتبہ پہلے بھی دیکھنے میں آیا ہے

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!