صحافیوں اور اپوزیشن کی جاسوسی سے خبردار کرنے پر مودی سرکار کا ایپل کیخلاف ایکشن

ویب ڈیسک

بھارتی حکومت کی جانب سے اپنے صحافیوں اور  اپوزیشن رہنماؤں کی جاسوسی سے متعلق خبردار کرنے پر مودی سرکار نے امریکی ٹیکنالوجی کمپنی ایپل (Apple)کے خلاف ایکشن لے لیا۔

بھارتی صحافیوں اور  اپوزیشن کی جاسوسی سے متعلق خبردار کرنے پر  بی جے پی عہدیداروں نے الٹا کمپنی کے الگو رتھمز (algorithms) کے ٹھیک ہونے سے متعلق ہی سوال اٹھا دیے۔

اس کے ساتھ ہی بی جے پی کے عہدیداروں نے کمپنی کی ڈیوائسز کی سکیورٹی سے متعلق تحقیقات کا مطالبہ بھی کیا ہے۔

 میڈیا رپورٹس کے مطابق بی جے پی کے سینئر عہدیداروں نے ایپل کے ایک سکیورٹی ایکسپرٹ کو بیرون ملک سے نئی دلی بلایا اور ان پر دباؤ ڈالا کہ وہ کمپنی کی جانب سے یوزر کو دی جانیوالی وارننگ کی کوئی دوسری توجیہہ پیش کریں۔

دوسری جانب اسرائیل کے پیگاسس اسپائی ویئر کا درجنوں ممالک میں صحافیوں اور انسانی حقوق کے سرگرم کارکنوں کے خلاف استعمال ہونے کا انکشاف ہوا ہے۔

ایمنسٹی انٹرنیشنل اور امریکی اخبار نے مشترکہ تحقیقات کی بنیاد پر تصدیق کی ہے کہ بھارتی حکومت نے اسرائیل سے لیے گئے پیگاسس اسپائی ویئر کی مدد سے صحافیوں کی ایک بارپھر جاسوسی کی ہے۔

دی وائر (The Wire) کے صحافی سدھارتھ ورداراجن اور آرگنائزڈ کرائم اینڈ کرپشن رپورٹنگ پروجیکٹ سے وابستہ آنند منگنالے کی اکتوبر میں بھارتی حکومت نے جاسوسی کی۔ 

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!