نوجوان ہندوستانی سپنر صرف 34 ٹی ٹونٹی وکٹوں کیساتھ نمبر 1 بولر کیسے بنا؟، آئی سی سی رینکنگ کی ساکھ پر سوالیہ نشان لگ گیا

ہندوستانی کرکٹ ٹیم کے لیگ سپنر روی بشنوئی انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (ICC) کی فراہم کردہ تازہ ترین درجہ بندی کے مطابق T20I میں نمبر 1 کے بولر ہیں۔ بشنوئی نے حال ہی میں ختم ہونے والی بھارت آسٹریلیا ٹی ٹونٹی سیریز میں 18.22 کی اوسط اور 8.20 رنز فی اوور کے اکانومی ریٹ کیساتھ 9 وکٹیں حاصل کیں، جو ہندوستان نے 4-1 سے جیتی۔

یہ حیرت کی بات ہے کہ روی بشنوئی نے اتنی لمبی چھلانگ لگائی ہے کیونکہ اس نے اپنے T20I کیریئر میں صرف 34 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ انہوں نے راشد خان اور ونیندو ہسرنگا جیسے کھلاڑیوں کو پیچھے چھوڑ دیا۔ واضح رہے کہ راشد خان نے 82 ٹی ٹونٹی میچوں میں 14.80 کی اوسط اور 6.16 کی اکانومی کے ساتھ 130 وکٹیں حاصل کی ہیں۔ دریں اثناء وینندو ہسرنگا نے اپنے ٹی ٹونٹی کیریئر کے 58 میچوں میں 15.80 کی باؤلنگ اوسط اور 6.89 کے اکانومی ریٹ کے ساتھ 91 وکٹیں حاصل کیں۔

ان دونوں کھلاڑیوں کا اپنے پورے کیریئر میں آسٹریلیا کے خلاف بشنوئی کے حالیہ آؤٹ سے بہتر ریکارڈ ہے جو حالیہ رینکنگ اپ ڈیٹ کو مزید عجیب بنا دیتا ہے۔ اس سے بھی زیادہ حیران کن بات یہ ہے کہ آسٹریلیا کے ساتھ T20I سیریز شروع ہونے سے پہلے روی بشنوئی 603 پوائنٹس کے ساتھ دنیا میں 19ویں نمبر پر تھے اور 23 نومبر 2023ء کو پہلے T20I میں ایک وکٹ پر 54 رنز دینے کے بعد ان کی رینکنگ میں بہتری آئی جس کے ساتھ وہ 18ویں نمبر پر آ گئے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!