ایم کیو ایم پاکستان حقیقی مینڈیٹ لیکر واپس آئی ہے، خالد مقبول صدیقی

تشکُّر نیوز رپورٹنگ،

ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ خالد مقبول صدیقی نے کہا ہے کہ ہم حقیقی مینڈیٹ لے کر واپس آئے ہیں لیکن گورنر شپ اور وزارتوں کیلئے نہیں آئے ہیں۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خالد مقبول صدیقی کا کہنا تھا عہدوں کا فیصلہ ہوگیا ہے لیکن ہم نے کوئی عہدہ نہیں مانگا ہے۔

انہوں نے کہا کہ اس بار ایک مرتبہ پھر عوام نے اپنا کام پورا کیا ہے جس کی بنا پر آج یہ نومنتخب ایوان ہمارے سامنے موجود ہے ، 75 سال سے جو منظر نامہ تھا وہ آج بھی ویسا ہی ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ آج 75 سالوں بعد یہ وقت آگیا ہے کہ ہم پاکستانیوں کو رعایا سے عوام کے عہدے پر پرموٹ کرسکیں یعنی عوام کا مقصد یہ ہے کہ وہ کبھی حکمران بھی بن سکتے ہیں۔

سربراہ ایم کیو ایم پاکستان کا کہنا تھا کہ  ہم اس بار گورنرشپ یا کسی وزار کے لئے نہیں آئے بلکہ ہم 23 کروڑ عوام کی ذمہ داری لے کر آئے ہیں تاکہ ان کو ان کے حقوق دلوا سکیں اور جمہوریت کے ثمرات ان تک پہنچا سکیں۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم ایک نسخے کے تحت آئے ہیں اور آئندہ 05 سالوں تک اسی پر قائم رہیں گے کیونکہ اختیارات عوام تک پہنچائے بغیر جمہوریت کا کوئی فائدہ نہیں ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!