کراچی میں ہواؤں کا رخ تبدیل ہوتے ہی نئے وائرس کے کیسز رپورٹ

تشکُّر نیوز رپورٹنگ،

کراچی میں ہواؤں کا رخ تبدیل ہوتے ہی ایک نئے وائرس کا اضافہ بھی ہو گیا ہے۔

رجسٹرار جناح اسپتال ڈاکٹر ہالار شیخ کے مطابق موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی مختلف وائرل انفیکشنز میں بھی اضافہ ہو جاتا ہے، کراچی میں بھی موسم کی تبدیلی کے ساتھ ایڈینو نامی وائرس کا خطرہ بڑھ گیا ہے۔

ڈاکٹر ہالار شیخ نے بتایا کہ کراچی میں موسم کی تبدیلی کے ساتھ ہی ایڈینو نامی وائرس کا پھیلاؤ سامنے آیا ہے، وائرس سے عموماً نزلہ، کھانسی، زکام اور بخارکی کیفیت ہوتی ہے، وائرس سے متاثرہ شخص دو سے تین دن مکمل آرام کرے تو وہ صحتیاب ہو جاتا ہے۔

رجسٹرار جناح اسپتال نے خبردار کرتے ہوئے کہا کہ اس وائرس سے خاص طور پر بزرگ، دمہ اور ذیابیطس کے مریض احتیاط کریں، یہ وائرس غذائیت کی کمی اور احتیاط نہ کرنےسے نمونیہ کی شکل بھی اختیارکر سکتا ہے۔

اس صورتحال کے پیشِ نظر وائرس سے بچاؤ کی احتیاطی تدابیر سے متعلق ڈاکٹر ہالار شیخ نے بتایا کہ ایڈینو نامی انفیکشن کے دوران ایک دوسرے سے ہاتھ ملانے سے گریز کیا جائے اور ایسے موسم میں باہر کے کھانوں سے بھی اجتناب برتا جائے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!