...

وٹامن K کا ذیابیطس کیخلاف مزاحمتی کردار دریافت

مونٹریال: سائنسدانوں کی ایک ٹیم نے حال ہی میں ٹائپ 2 ذیابیطس کیخلاف وٹامن K کے حوالے سے ایک زبردست دریافت کی ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کینیڈا میں یونیورسٹی ڈی مونٹریال اور مونٹریال کلینکل ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے سائنسدانوں کی ٹیم نے وٹامن K کے ذیابیطس کیخلاف مزاحمتی کردار سے متعلق تحقیق پیش کی ہے۔ اس وٹامن کو عام طور پر خون جمانے میں کردار ادا کرنے کیلیے جانا جاتا ہے۔ جب کسی کو گہرا زخم لگتا ہے تو وٹامن K خون کو ٹھوس بنانے اور اسے بہنے سے روکنے میں مدد کرتا ہے۔

تاہم نئی تحقیق سے پتہ چلتا ہے کہ وٹامن K کے فوائد صرف خون جمانے کی حد تک ہی نہیں بلکہ اس سے کہیں زیادہ ہے۔ ماضی میں ہوئی تحقیقات نے اگرچہ اشارتاً یہ ثابت کیا تھا کہ وٹامن K کی کمی ذیابیطس کے بڑھتے خطرے سے منسلک ہوسکتی ہے تاہم اب تک وٹامن K اور ذیابیطس کے خلاف اس کے اہم کردار کے درمیان تعلق واضح نہیں ہوپایا تھا۔

حالیہ نتائج لبلبے (pancreas) پر کی گئی تحقیق سے سامنے آئے ہیں۔ لبلبے میں ایسے خلیات ہوتے ہیں جنہیں beta cells کہا جاتا ہے جو انسولین تیار کرتے ہیں۔ ٹیم نے پایا کہ یہ خلیات ایک مخصوص کیمیائی عمل جس میں وٹامن K بھی شامل ہوتا ہے، کیلئے ذمہ دار ہوتے ہیں۔

محققین نے ان خلیوں یعنی beta cells کے اندر ایک نئے پروٹین کی نشاندہی کی جسے انہوں نے ERGP کا نام دیا۔ یہ پروٹین ٹھیک طریقے سے کام کرنے کے لیے وٹامن K پر انحصار کرتا ہے۔ ERGP کا کام ہے مناسب مقدار میں انسولین پیدا کرنا اور وٹامن کے ERGP کیلئے ضروری ہے۔ وٹامن K  ہی ہے جس کی وجہ سے ERGP مؤثر طریقے سے انسولین تیار کرپاتا ہے۔

4 / 100

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Don`t copy text!
Seraphinite AcceleratorOptimized by Seraphinite Accelerator
Turns on site high speed to be attractive for people and search engines.